مانسہرہ: وفاقی وزیر برائے توانائی خرم دستگیر نے منگل کو کہا کہ سوکی کناری پاور پراجیکٹ 884 میگاواٹ بجلی پیدا کرے گا۔
مانسہرہ میں سوکی کناری ٹرانسمیشن لائن منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر توانائی نے منصوبے پر کام کرنے والے لوگوں کی کاوشوں کو سراہا۔

Senate's Electricity Bill 2022 Ambitiously Aims to Transform Nigeria's  Power Sector – PLAC Legist

Image Source: PLAC

خرم دستگیر نے کہا کہ یہ منصوبہ پاکستان میں سستی اور وافر بجلی کی بنیاد رکھے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں خاص طور پر ہزارہ کے علاقے میں سستی بجلی کے ترقیاتی منصوبوں پر کام کو تیز کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ سوکی کناری کے علاوہ ہزارہ ریجن میں دیامر بھاشا پراجیکٹ پر بھی کام جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی سابقہ ​​حکومت نے دیامر بھاشا ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کے لیے زمین خریدی تھی۔
انہوں نے کہا کہ ہزارہ خطہ سستی اور وافر بجلی کی پیداوار میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔
وزیر نے کہا کہ پانچ سال قبل شاہد خاقان عباسی نے نیلم جہلم ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کا افتتاح کیا تھا۔
وفاقی وزیر توانائی نے کہا کہ حکومت مستقبل قریب میں بجلی کے نرخ کم کرنے جا رہی ہے۔