پیسے کا لالچ بڑے سے بڑے شخص کو برباد کردیاتا ہے اور آئے دن ہم دیکھتے ہی کہ ایک ہی دن میں لکھ پتی اور کروڑ پتی بننے کے چکر میں لوگ کئی کئی سال جیل کی چکی پیستے ہیں ایسا ہی کچھ بھارت کی یوٹیوبر کے ساتھ ہوا جو سوشل میڈیا پر نام کے ساتھ ساتھ ٹھیک ٹھا ک پیسے کمارہی تھی- 22سالہ نمرہ قادر کے یوٹیوب پر 6لاکھ 17ہزار سبسکرائبرز ہیں -نمرہ قادر نے ایک بھارتی بزنس مین کے بیٹے کو ہراسگی کیس میں پھنسانے کی دھمکی دے کر 80لاکھ روپے لوٹنے کی چال چلی مگر خود مشکل مین پھنس گئی اورسائبر کرا ئم برانچ ٹیم نے اس بھارتی یوٹیوبر کو گرفتار کر لیا گیا-

 

 

اس واردات میں نمرہ قادر کا شوہر منیش عرف ویرات بینی وال بھی ملوث تھا جو مفرور ہو چکا ہے جس کی گرفتاری کے لیے پولس چھاپے ماررہی ہے ۔ نمرہ کو عدالت میں پیش کیا گیا جہاں سے اسے 4روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔
دنیش نے ایف آئی آر میں بتایا کہ ”نمرہ نے مجھ سے دوستی کی اور ایک رات وہ نمرہ اور اس کے شوہر کے ساتھ ایک ہوٹل روم میں ٹھہرا جہاں انھوں نے اس کی نازیبا ویڈیو بنا لیں ۔ اگلی صبح نمرہ نے دنیش کو دھمکی دے دی کہ اگر اس نے اسے اپنے بینک کارڈز نہ دیئے تو وہ اسے میڈیا پر بدنام کردے گی جس پر دنیش ڈر گیا اور اسے کئی ماہ تک پیسے دیتا رہا مگر پھر اس نے اپنے والدین کو یہ بات بتا دی اس کے والد نے پولیس میں رپورٹ درج کروادی جس کے بعد انکے گھر پر چھاپہ مارا گیا جس مین نمرہ پکڑی گئی اور اس نے اپنے جرم کا اقرار بھی کرلیا ۔تاہم منیش ابھی تک پولیس کی پکڑ میں نہیں آیا –