پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں چکی کے آٹے کی قیمت 120 سے 125 روپے فی کلو تک پہنچ گئی.پشاور اور کوئٹہ میں بھی آٹے کا بحران شدت اختیار کر گیا ہے ، 120 سے 125 روپے کلو فروخت ہونے پنجاب میں گندم کی امدادی قیمت کے اعلان پر آٹا مزید مہنگا ہوگیا، جس کے بعد ملز مالکان نے 15 کلو آٹے کا تھیلا 100 روپے مہنگا کر دیا آج یہ بھی کبریں گردش کررہی ہیں کہ سندھ مین 20 کلو کے آٹے کی قیمت 4000 روپے تک جاسکتی ہے ۔

دوسری جانب پشاور سمیت خیبر پختونخوا میں آٹا مزید مہنگا ہو گیا ہے، صوبے میں 20 کلو آٹے کے تھیلے کی قیمت 50 روپے اضافے کے بعد 2100 روپے تک پہنچ گئی ہے۔بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں ایک ہفتے کے دوران آٹے کی قیمتوں میں 350 روپے کا اضافہ ہوا اور آٹا ڈیلرز نے آٹے کی قیمتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے حکومت کو چاہیے کہ اس بحران کے بڑھنے سے پہلے ہی اس پر قابو پالے کیونکہ یہ کسی بھی قسم کے المیے کو جنم دے سکتا ہے .