ملکی حالات کے سبب ساڑھے چھ لاکھ پاکستانی نوجوان ملک چھوڑ نے لگے

Mashkoor Hussnain
1 Min Read

ہر سال کتنے لاکھ نوجوان ملک چھوڑ رہے ہیں، اور انکے ملک چھوڑنے کی وجہ کیا ہے ؟ماہرین نےوجوہات بیان کر دیں حامد میر کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“ میں ماہرین تعلیم اور نوجوانوں نے کہا ہے کہ ہر سال ساڑھے چھ لاکھ پاکستانی نوجوان ملک چھوڑ رہے ہیں، ملک چھوڑنے کی وجہ سیاسی عدم استحکام اور بیروزگاری ہے،نوجوانوں کی اکثریت طبقاتی نظام تعلیم کا خاتمہ چاہتی ہے، اعلیٰ تعلیم کیلئے بیرون ملک جانے والوں کی اکثریت واپس آنا چاہتی ہے۔

ماہر تعلیم ڈاکٹر عابد شیرانی نے کہا کہ ملک میں سیاسی استحکام نہیں ہوگا تو معاشی عدم استحکام ہوگا، حکومت مختلف تعلیمی نظام کر کے عالمی معیار کے مطابق یکساں تعلیمی نظام بنائے۔ کیریئر کاؤنسلر سید عابدی نے کہا کہ ہر سال ساڑھے چھ لاکھ پاکستانی نوجوان ملک چھوڑ کر چلے جاتے ہیں، کم نمبرز لانے والے نوجوانوں کو باہر کی بڑی یونیورسٹیوں میں داخلے مل سکتے ہیں۔سارہ تنویرنے کہا کہ نوجوان اچھے کیریئر کاؤنسلر تک پہنچ جائیں تو روایتی پروفیشنز کے بجائے اچھی سکلز سروسز میں جاسکتے ہیں۔ پروفیسر طیب فاروق بھٹی نے کہا کہ پاکستان میں سیاسی استحکام تب ہی آئے گا جب تمام ادارے اپنی اپنی حدود میں رہ کر کام کریں گے۔

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *