لڑکی کا روپ دھار کر امتحان دینے والا بدنصیب عاشق کیسے پکڑا گیا؟

Mashkoor Hussnain
3 Min Read

کہتے ہیں محبت اور عشق میں ہر چیز جائز ہوتی ہے اس کا عملی مظاہرہ بھارت کے ایک نوجوان نے کیا جو اپنی محبوبہ کی خواہش پوری کرنےکے لیے اس کی جگہ امتحان دینے پہنچ گیا مگر قسمت نے یاوری نہ کی -بھارتی پنجاب میں ایک یونیورسٹی کے امتحانی عملے کو اس وقت دلچسپ و عجیب صورتحال کا سامنا کرنا پڑا جب ایک نوجوان لڑکی کا بھیس بدل کر امتحان ہال میں پہنچ گیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق واقعہ پنجاب کے علاقے فرید کوٹ کی یونیورسٹی کے کوٹکپورہ میں واقع ڈی اے وی سکول کے امتحانی سنٹر میں چند دن قبل پیش آیا۔
سات جنوری کو بابا فرید یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں طبی عملے کی بھرتیوں کے لیے امتحانات ہو رہے تھے۔ اس دوران انگریز سنگھ نامی ایک نوجوان نے اپنی گرل فرینڈ پراماجیت کور کی جگہ امتحان میں شامل ہونے کی کوشش کی۔ انگریز سنگھ نے اپنی شکل کو لڑکی کے ساتھ مشابہہ بنانے کے لیےخواتین کا لباس پہنا اور میک اپ کے ساتھ ساتھ لال چوڑیاں اور بِندیا بھی پہنی اور پھر وہ امتحانی کمرے میں جا پہنچا۔ لیکن امتحانی عملے کو اس شخص کو پکڑنے میں کچھ زیادہ وقت نہیں لگا اور پھر انہوں نے پولیس سٹیشن میں شکایت درج کرا دی۔
پولیس کے مطابق انگریز سنگھ نے خود کو پرماجیت کور ثابت کرنے کے لیے پورے انتظامات کر رکھے تھے حتیٰ کہ انہوں نے لڑکی کے نام کے جعلی ووٹر اور آدھار کارڈز بھی بنوا رکھے تھے۔وہ اس وقت پکڑا گیا جب بائیو میٹرک کے دوران انگریز سنگھ کے فنگرپرنٹس اصل امیدوار کی انگلیوں کےنشانات سے مختلف نکلے ۔پولیس کے مطابق انگریز سنگھ کے خلاف قانونی کارروائی کا آغاز کر دیا گیا ہے۔اب نہ اس کی گرل فرینڈ کو نوکری ملے گی اور نہ اس پابند سلاسل کو وہ لڑکی غریب اب کئی سال عدالتوں کے چکر لگائے گا اور دنیا جہان کی باتیں بھی سنے گا -آپ سے اگر کوئی لڑکی ایسا کرنے کا کہے تو کہنا نہ میم صاحب امتحان اپنا اپنا…….

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *