بابر سے دوستی کی وجہ سےکی جانے والی تنقید پر شاداب خان پھٹ پڑے

Mashkoor Hussnain
3 Min Read

پاکستان کے مایہ ناز آل راؤنڈر آج کل بالکل آؤٹ آف فارم ہیں ان کی اسی کارکردگی کی بنا پر پاکستانیوں نے بہت شور مچایا کہ انہیں ورلڈ کپ سکواڈ میں شامل نہ کیا جائے مگر بابر اعظم نے کسی کی ایک نہ سنی اور ان کو بھارت لے گئے مگر پھر ان کو ٹیم سے ڈراپ کرنا پڑا جس کی وجہ سے بابر اعظم خود بھی کپتانی سے محروم ہوگئے -اب اس حوالے سے شاداب خان نے اپنے جزبات کا اظہار ایک میڈیا چینل کو انٹرویو میں کیا –
سماء کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے قومی آل راونڈر شاداب خان کا کہنا تھا کہ ورلڈ کپ میں بیٹنگ باولنگ اور فیلڈنگ میں ٹیم ہونے کے ناطے ویسی پرفارمنس نہیں دے سکے جس کی توقع تھی ، میری پرفارمنس اچھی نہیں تھی، مڈل میں آوٹ کرتا تو ٹیم کی یہ پوزیشن نہ ہوتی۔ ان کا کہنا تھا کہ جب ٹیم ہارتی ہے تو بہت باتیں ہوتیں ہیں، ٹیم کے کور گروپ کی پرفارمنس نہیں ہورہی ہوتی تو پھر لگتا ہے ٹیم میں اختلافات ہیں حالانکہ ایسی کوئی بات نہیں ہے ٹیم متحد ہے اور ہم فیملی کی طرح کھیلتے ہیں۔

اھوں نے اس بات کی نفی کی اور اس سوچ کو غلط قرار دیا کہ لیگز کھیلنے سے کوئی ورک لوڈ نہیں بڑھتا ، ان کا خیال ہے کہ لیگز کھیلنے سے آپ کو اعتماد ملتا ہے اور کنڈیشنز سے آشناء ہوجاتے ہیں ، ورک لوڈ مینج کیا جاتا ہے پتا ہوتا ہے کہ کتنا ورک لوڈ مینج کرنا ہے، شاداب نے کہا کہ جب پہلے اچھا کھیل رہے تھے تب بھی لیگز ہی کھیلا کرتے تھے، دوستی یاری تو نیا ٹرینڈ شروع ہوگیا ہے ، جب میں لیگ کھیلتا ہوں تو بابر اعظم تھوڑی کپتان ہوتا ہے اور وہ تھوڑی فرنچائزز کو کہتا ہے کہ شاداب کو شامل کرو۔

انہوں نے کہا کہ تنقید کرنی چاہئیے جب پرفارمنس نہ ہو لیکن ذاتی ہونے سے اختلاف ہے، بابر کی دوستی کی وجہ سے بہت کچھ سننے کو ملتا ہے، فرنچائز مجھے ٹاپ کیٹگری میں پک کرتی ہے تو اسکی کوئی نہ کوئی وجہ تو ہوگی ، مجھے لگتا ہے کہ پھر بابر کی وجہ سے ہی پک کرتے ہوں گے۔

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *