جیکب آباد: تھل سے آنے والے سیلابی پانی نے جیکب آباد میں تباہی مچا دی ہے جس سے شاہ غازی لنک روڈ اور نیشنل ہائی وے زیر آب آ گیا ہے، جو سندھ، پنجاب اور بلوچستان کو ملاتا ہے۔

پاکستان میں معمول سے زیادہ مون سون بارشوں اور دریائے سندھ اور دیگر دریاؤں میں آنے والے سیلاب سے تباہی ہوئی ہے۔

Floodwater drowns road connecting Sindh, Punjab, Balochistan | Shehzad  Report

بکا پور یونین کونسل کے بیشتر دیہات سیلابی پانی میں ڈوب گئے ہیں جب کہ دیہات کے سینکڑوں لوگ سیلابی پانی میں پھنسے ہوئے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق سیلابی ریلا اب کوئٹہ روڈ کی طرف بڑھ رہا ہے جو بلوچستان سے ملاتا ہے۔

واضح رہے کہ کوئٹہ سکھر گزشتہ پانچ روز سے بند ہے۔ بی بی نانی اور پنجرا پور پل سیلابی پانی میں بہہ جانے سے سینکڑوں گاڑیاں ناڑی پل پر پھنس گئی ہیں۔

مزید یہ کہ دریائے سندھ میں کوٹ مٹھن کے مقام پر 7 لاکھ کیوسک کا بہاؤ جاری ہے۔ خریداری مرکز میں ذخیرہ شدہ گندم کو محفوظ مقام پر منتقل کیا جا رہا ہے۔