ہائیکورٹ کا سوشل میڈیا سے فحش مواد فوری ہٹانےکا حکم

Mashkoor Hussnain
2 Min Read

سوشل میڈیا پر دنیا بھر کے مغربی ممالک میں فحش مواد چلانے کی اجازت ہے مگر اسلامی ممالک میں اسے گناہ تصور کیا جاتا ہے کیونکہ یہ شرعئی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہے -اللہ نے مسلمانوں کو فحش حرکات و سکنات سے منع فرمایا ہے اس لیے اسلامی ممالک میں ایسی ویب سائٹس کو بند رکھا جاتا ہے جہاں بے حیائی اور فحاشی کی اشاعت ہورہی ہے -اسی لیے آج سندھ ہائی کورٹ نے اس حوالے سے واضح حکم جاری کردیا ہے -سندھ ہائیکورٹ نے سوشل میڈیا پلیٹ فارمز سے فحش مواد ہٹانے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ نے کراچی میں فیملی وی لاگنگ کے نام پر سوشل میڈیا پر فحش مواد کی موجودگی سے متعلق کیس کی سماعت کی۔ عدالت نے حسن بیگ کی درخواست پر تحریری حکم نامہ جاری کردیا جس میں چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ نے فیس بک ، ٹک ٹاک ، یوٹیوب، اسنیپ چیٹ اور دیگر ایپس سے غیر اخلاقی مواد پر فوری ایکشن لینےکا حکم دیا ہے۔

عدالت نے وفاقی حکومت اور دیگر کو کارروائی کرکے 20 فروری تک رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا۔عدالت نے کہا کہ وفاقی حکومت اور دیگر کارروائی کرکے 20 فروری تک رپورٹ پیش کریں۔اس سے پہلے بھی ماضی میں کئی سال تک فحاشی پھیلانی والی ویب سائٹس پاکستان میں بند رکھی جاچکی ہیں –

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *