خاتون سیاح کو تھپڑ مارنے والے پولیس افسر کی نوکری خطرے میں پڑگئی

Mashkoor Hussnain
2 Min Read

گزشتہ روز ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں ایک غیر ملکی سیاح کو پولیس اہل کار کی جانب سے نہ صرف ہراساں کیا گیا بلکہ پولیس اہل کار نے اس کو بندوق سے ڈرانے کی کوشش بھی کی تو خاتون چلانے لگی کہ مارو مجھے گولی چلاؤگولی اس کے بعد وہ پولیس اہل کار اپنی سرکاری گاڑی لے کر وہاں سے نکل گیا -اب صادق آباد میں غیرملکی سائیکلسٹ کو تھپڑ مارنے والے اے ایس آئی کے خلاف تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔

ترجمان پنجاب پولیس کے مطابق غیر ملکی سائیکلسٹ سے بدترا ور قابل شرم رویہ اختیار کرنے کی تحقیقات کے بعد ہی اے ایس آئی لیاقت علی کے خلاف کارروائی کی جائےگی۔پولیس ترجمان کے مطابق تین غیرملکی سائیکلسٹ ہفتے کے روز سندھ سے پنجاب کی حدود میں داخل ہوئے تو ایس او پی کے مطابق انہیں سکیورٹی فراہم کی گئی تاہم وہ اس بات پر بضد تھےکہ انہیں کوئی سکیورٹی نہ دی جائے، جس پر تلخ کلامی کا واقعہ پیش آیا۔ پولیس ترجمان کا کہنا ہےکہ غیرملکی سائیکلسٹ نے غصے میں اے ایس آئی پر سپرے کردیا تھا جس پر اے ایس آئی نے غیرملکی سیاح کو تھپڑ مارا تھا۔پولیس ترجمان کے مطابق دو سائیکلسٹ صادق آباد کے نجی ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے ہیں جب کہ تیسرا جاچکا ہے۔

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *