سلمان اکرم راجہ کا خود کو آزاد امیدوار قرار دینے کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج

Mashkoor Hussnain
2 Min Read

پاکستان کے صف اول کے وکیل سلمان اکرم راجہ پوری کوشش کررہے ہیں کہ الیکشن کے بعد سیاست دانوں کی منڈی نہ سجے اور نوٹوں کے ذریعے وفاداریان تبدیل کروانے کا مکروہ دھندا دوبارہ شروع نہ ہو اس کے لیے سب سے پہلے انھوں نے خود ایک ویڈیو میں قرآن اٹھا کر یہ حلف دیا کہ اگر اس بار وہ الیکشن جیت گئے تو تحریک انصاف میں ہی رہیں گے اور کسی دوسری پارٹی میں نہیں جائیں گے اور اب انھوں نے باقی لوگوں کے لیے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹا دیا ہے امید ہے کہ قاضی فائز عیسیٰ ان کی یہ فریاد سنیں گے بھی اور ان کی داد رسی بھی کریں گے –
تحریک انصاف کے حمایت یافتہ امیدوار ایڈووکیٹ سلمان اکرم راجہ نے خود کو آزاد امیدوار قرار دینے کا الیکشن کمیشن کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا۔

سلمان اکرم راجہ نے وکیل سمیرا کھوسہ ایڈوکیٹ کی وساطت سے درخواست دائر کی ۔ درخواست میں الیکشن کمیشن سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا ۔ درخواست میں مؤقف اپنایا گیا کہ پاکستان تحریک انصاف 1996 سے الیکشن کمیشن میں بطور سیاسی جماعت رجسٹرڈ ہے۔درخواست گزار این اے 128 سے پی ٹی آئی سے حمایت یافتہ امیدوار ہے۔ انٹرا پارٹی الیکشن نہ کرنے پر انتخابی نشان واپس لیا گیا۔ پارٹی تاحال موجود ہے۔ الیکشن کمیشن نے آئندہ عام انتخابات میں بطور آزاد امیدوار ڈی کلئیر کردیا ہے۔درخواست گزار کی جانب سے استدعا کی گئی کہ عدالت الیکشن کمیشن کی جانب سے آزاد امیدوار ڈی کلئیر کرنے کا اقدام کالعدم قرار دیتے ہوئے بیلٹ پیپر پر پی ٹی آئی کا امیدوار درج کرنے کا حکم دے۔اگر ان کی یہ اپیل نہ مانی گئی تو الیکشن کے بعد اسمبلی پہنچنے والے بکنے لگیں گے جس سے ایک تماشا ملک میں لگے گا اور مزید بحران پیدا ہوگا –

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *