لاہور ہائی کورٹ کا آلودگی کم کرنے کے لیےتعلیمی اداروں کی چھتوں پر پودے اگانے کا حکم

Mashkoor Hussnain
2 Min Read

لاہور میں سموگ نے لاہوریوں کا سانس لینا دوبھر کررکھا ہے -مگر اس کے تدارک کے لیے لاہور ہائی کورٹ اپنا 100 پرسنٹ دینے کی بھرپور کوشش کررہی ہے اور ایسے فیصلے دے رہی ہے جس سے آلودگی میں کمی لائی جاسکے -آج اسی سلسلے میں سکولوں کی عمارات پر گملوں میں پودے لگانے کا حکم جاری کیا گیا جو قابل تحسین عمل ہے -لاہور ہائیکورٹ نے سموگ کے تدارک کیلئے دائر درخواستوں کا تحریری حکم جاری کردیا، لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد کریم نے گزشتہ سماعت کا تحریری حکم جاری کیا۔

نجی ٹی وی چینل دنیا نیوز کے مطابق عدالت نے تحریری حکم میں کہا ہے کہ سکولوں او ر کالجز کی چھتوں پر بھی پودے اور گارڈن بنائے جائیں اس سے آلودگی میں کمی ہوگی اور درجہ حرارت بھی کم ہوگا اور بچھے راحت محسوس کریں گے -، اس حوالے سے عملدرآمد رپورٹس عدالت میں جمع کروائی جائیں، سرکاری وکیل نے بتایا کہ لیسکو اہلکاروں نے درخت کاٹے جس پر پی ایچ اے نے لیسکو کے خلاف فوجداری مقدمہ درج کرنے کی درخواست جمع کرا دی- عدالتی حکم میں لکھا گیا ہے کہ جوڈیشل کمیشن کی رپورٹ کے مطابق 114 یونٹس نے آلودگی پھیلانے کی خلاف ورزی کی، انڈسٹریل یونٹس نے بیان حلفی جمع کرایا، 24 انڈسٹریل یونٹس تاحال سیل ہیں۔

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *