اسماعیل ہنیہ کی پوتی رؤی ہمام ہنیہ کے بعد فلسطینی صدر کا پوتا بھی شہید

Mashkoor Hussnain
2 Min Read

فلسطین اور اسرائیل کی جنگ میں عام افراد کے ساتھ اب حکومتی عہدیداران کے اہل خانہ بھی محفوظ نہیں رہے پہلے اسرائلی وزیراعظم نیتن یاہو کے بھتیجے کے مرنے کی خبریں آئیں اور اب فلسطینی صدر کے پوتے کی شہادت کی بھی اطلاعات ہیں –
اسرائیل فوج کی مقبوضہ فلسطین کے علاقے غزہ میں بمباری کے نتیجے میں مزاحمتی تنظیم حماس کے سربراہ اسماعیل ہنیہ کا پوتا شہید ہوگیا۔اسرائیلی بمباری سے آبادیاں، اسکول، اسپتال اور مساجد سمیت کوئی جگہ محفوظ نہیں ہے۔اسرائیلی فوج فلسطینیوں پر زمین تنگ کرنے میں مصروف ہے – ہسپتالوں پر یہ کہہ کر بم برسادیے جاتے ہیں کہ یہاں حماس کے جنگجو چھپے ہوئے ہیں جس میں ایک فیصد بھی صداقت نہیں ہے –

امریکہ اور دیگر مغربی طاقتوں کی ایما پر اسرائیل کی جانب سے مسلسل 46 ویں روز محصور غزہ پر بمباری جاری ہے اور اب تک اسرائیلی فضائیہ ہزاروں ٹن بارود گراچکی ہے۔مغرب کی جانب سے اسرائیل کو اسلحے کی سپلائی مسلسل جاری ہے جس پر سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے شدید تحفظات کا اظہار کیا ہے –

اسرائیلی بمباری کے نتیجے میں شہدا کی تعداد 14ہزار سے تجاوز کرچکی ہےجن میں 5840 بچے، 3920 خواتین، 205 طبی عملے کے ارکان جس میں ایک ڈاکٹر بھی شامل ہے۔یاد رہے کہ گزشتہ دنوں اسماعیل ہنیہ کی پوتی رؤی ہمام اسماعیل ہنیہ بھی اسرائیلی بمباری میں شہید ہوگئیں تھیں، وہ بھی میڈیکل کی طالبہ تھیں۔البتہ آج سے یہ خبریں منظر عام پر آنا شروع ہوگئی ہیں کہ حماس اور اسرائیل 4 روزہ جنگ بندی پر آمادہ ہوگئے ہیں تاہم جب تک اس کا باقاعدہ اعلان نہیں ہوجاتا فلسطینیوں کے لیے ہر دن اور رات روز قیامت سے کم نہیں ہے –

Share This Article
Leave a comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *