لاہور: پاکستان مسلم لیگ (ق) کے رہنما مونس الٰہی کے قریبی دوست لاہور کے گارڈن ٹاؤن سے ’اغوا‘ ہونے کے چند روز بعد وطن واپس پہنچ گئے۔
تفصیلات کے مطابق احمد فاران کو گزشتہ رات لاہور میں اس کے گھر کے باہر نامعلوم افراد نے دو گاڑیاں چلا کر چھوڑ دیا۔ اے آر وائی نیوز نے فاران کی واپسی کی سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کر لی ہے۔

Who is Moonis Elahi's close friend 'abducted' by unknown men in Lahore?

Image Source: Daily Pakistan

ظہیر نے بھی اپنے بھائی احمد فاران کی واپسی کی تصدیق کی ہے۔ بعد ازاں انہیں لاہور ہائی کورٹ میں پیش کیا گیا جہاں ان کی ’گمشدگی‘ کے خلاف درخواست دائر کی گئی۔
عدالت میں پیشی کے دوران صحافی کے پوچھے گئے سوال کے جواب میں احمد فرحان نے کہا کہ وہ اپنے خاندان کے ساتھ رہ رہے ہیں۔
سر کی چوٹ کے بارے میں مونس الٰہی کے قریبی دوست نے بتایا کہ وہ عدالت آتے ہوئے غلطی سے گاڑی کے دروازے سے ٹکرا گئے تھے۔
وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی کے صاحبزادے نے گزشتہ ہفتے دعویٰ کیا تھا کہ ان کے دوست فاران احمد کو لاہور میں دو سیاہ گاڑیوں پر سوار نامعلوم افراد نے ’اٹھالیا‘۔
مسلم لیگ ق کے رہنما نے کہا کہ وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے انہیں گرفتار کرنے سے انکار کیا ہے۔
لاہور ہائی کورٹ نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے سی سی پی او لاہور غلام محمود ڈوگر کو مونس الٰہی کے دوست کی فوری بازیابی یقینی بنانے کا حکم دیا تھا۔