14 ����
دولت کی ہوس انسان کو کتنا گرادیتی ہے اس کا اندازہ اس خبر سے ہوتا ہے جہاں مسلمان کہلانے والے ملک کے درندہ صفت لوگوں نے ایک معصوم بچے کو اغوا کیا 17 روز تک قید میں رکھنے کے بعد اور پھر اس کا گردہ نکال کر اسے زندگی بھر کے لیے معزور کردیا – -لاہور کے علاقے مناواں سے اغواء ہونےوالے 14 سالہ نوجوان کا گردہ نکال لیاگیا ، پولیس نے نوجوان کے اغواءمیں سہولت کاری میں ملوث3 ملزم گرفتارکرلئے۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق پولیس کاکہناہے کہ عبداللہ کو مبینہ طور پر بے ہوش کرکے راولپنڈی لیجایاگیا ،نوجوان کو 17 دن راولپنڈی میں رکھ کر ادویات دی جاتی رہیں ،گروہ فروش گروہ نے نوجوان کا آپریشن کرکے گردہ نکال لیا۔پولیس کاکہناہے کہ لوکیشن ٹریس کرکے مغوی کو راولپنڈی سے بازیاب کرایاگیا،گروہ کی سہولت کاری میں ملوث3 ملزم گرفتار کرلئے گئے ،گروہ کے مرکزی کرداروں اور ڈاکٹرز کی گرفتاری کی کوشش جاری ہے،نوجوان کو ورثا ءکے حوالے کردیا گیاجس کا علاج جاری ہے۔ حکومت کا فرض ہے کہ اس گینگ کے تمام افراد کو میڈیا پر لائے اور اس بچے کو اتنے پیسے ادا کیے جائیں کہ اسے زندگی بھر اس معزوری کا احساس نہ ہو – �اس کیس میں ملوث شرپسندوں کو انجام تک پہنچانے کی غرض سے پنجاب حکومت نے اس کیس کو خود ہینڈل کرنے کا ہروگرام بنایا ہے – پنجاب ہیومن آرگن ٹرانسپلانٹ اتھارٹی کے سیکشن 11 ،10 شامل کی جائیں اتھارٹی مدعی بننے سے کیس آگے بڑھ سکے گا،خط میں مزید کہاگیاہے کہ ملزمان پر 1 کروڑ جرمانہ، 10 سال قید کی سزا ہوگی ،پنجاب ہیومن آرگن ٹرانسپلانٹ اتھارٹی کی مدعیت سے ایف آئی آر کی وقعت ہو گی ۔