اسلام آباد ہائیکورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز کی زبان ایک بار پھسل گئی اور ایک بار پھر تحریک انصاف کے پاس ایک اور ٹرولنگ پوائنٹ لگ گیا ، مریم نواز ایون فیلڈ ریفرنس میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہی تھیں جہاں ایک صحافی نے سوال پوچھا کہ آپ کہتی ہیں مذہب کو سیاست میں استعمال نہیں کرنا چاہئے مگر جاوید لطیف صاحب نے جو مذہب کارڈ کا استعمال کیا اس پر کیا کہیں گی جس پر مریم نواز نے کہا کہ جو جاوید لطیف نے کہا میں ذاتی طور پر اس امر کے خلاف ہوں ، مذہب ایک بہت ہی عزت و تکریم والی چیز ہے اسے سیاست جیسی گھٹیا چیزوں کیلئے استعمال نہیں کرنا چاہئے ۔
اس پر سب صحافی بھی دنگ رہ گئے تو مریم نے فوری تصحیح کرتے ہوئے کہا کہ میں نے پاکستان کی سیاست کی نہیں اپنی ذاتی سیاست کی بات کی کسی کو بھی اپنی ذاتی سیاست کیلئے مذہب کو استعمال نہیں کرنا چاہئے ، یہ بری بات ہے ، انھون نے کفگی متانے کے لیے مزید کہا کہ سیاست اقتدار کی تگ و دو کیلئے نہیں ہے ، سیاست تو عبادت ہے ۔