سابق وزیراعظم اور پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے سابق سینئر صوبائی وزیر علیم خان اور جہانگیر خان ترین سے اختلافات کی وجہ بتاتے ہوئے ان پر ان سے غیر قانونی فوائد حاصل کرنے کا الزام لگایا۔ایک روز قبل ایک پوڈ کاسٹ کے دوران بات کرتے ہوئے، سابق وزیر اعظم نے انکشاف کیا کہ دونوں اجنبی رہنماؤں کے ساتھ اختلافات اس وقت پیدا ہوئے جب انہوں نے یہ فوائد فراہم کرنے سے انکار کردیا۔

خان نے ان فوائد کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ علیم خان نے مجھ سے راوی کے قریب اپنی 300 ایکڑ اراضی کو قانونی حیثیت دینے کی توقع کی تھی ، ایسا نہ کرنے کی بنا پر میرے ان سے اختلافات پیدا ہو گئے۔ جہانگیر ترین کے حوالے سے بات کرتے ہوئے چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ان کا مسئلہ چینی کا بحران تھا جس پر کمیشن بھی بنایا گیا تھا ۔

ترین ان لوگوں کے ساتھ کھڑا تھا جو ملک کے سب سے بڑے ڈاکو ہیں۔ جب میں نے معاملے کی تحقیقات کا حکم دیا تو ترین کے ساتھ اختلافات پیدا ہو گئےیاد رہے کہ جہامگیر ترین کو عدالت نے چینی سکینڈل کیس میں تا حیات نااہل قرار دے دیا تھا ۔