حمزہ شہبازنے وزیراعلیٰ ہونے کا دعویٰ کردیا ؟:مریم کی مبارکباد

حکومت اور اپوزیشن عجیب وغریب قسم کی حرکات میں مصروف ہیں کبھی حکومت پارلیمنٹ میں اپوزیشن کوسرپرائزدینے کے لیے نئے قانون متعارف کروارہی ہے اورادھر اپوزیشن اقتدار حاصل کرنے کی اتنی جلدی میں ہے کہ ان سے 10 دن بھی گزارنا مشکل ہوگیا ہے اسی لیے اب وہ پارلیمنٹ چھوڑ کر ہوٹل میں اجلاس بلانے لگے ہیں

اس اجلاس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں تھی کیونکہ اجلاس پنجاب اسمبلی کے باہر منعقد ہوا اور اس میں صرف اپوزیشن کے قانون سازوں نے شرکت کی، کیونکہ اسپیکر پرویز الٰہی کے ساتھ ساتھ مک مکا کرکے ساتھ مل جانے والے ڈپٹی اسپیکر سردار دوست محمد مزاری نے اس کی صدارت نہیں کی۔

پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ کی جانب سے بھی اجلاس کے مقام کی تبدیلی یا حمزہ کی “فتح” سے متعلق کوئی نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا گیاتھا اسلیے یہ سرکاری نہیں نجی نوعیت کا اجلاس تھا ۔ٹوئٹر پر مریم نے حمزہ کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے ارکان کے ساتھ ساتھ جہانگیر ترین اور علیم خان کی قیادت میں پی ٹی آئی کے الگ الگ گروپوں سے تعلق رکھنے والوں کے ساتھ اجلاس میں شرکت کا اعلان کیا۔

اجلاس کی صدارت پیپلز پارٹی کی ایم پی اے شازیہ عابد نے کی، جنہیں 3 اپریل کو پنجاب اسمبلی کے 40ویں اجلاس کے لیے پینل آف چیئر مین مقرر کیا گیا تھا۔پنجاب کی صوبائی اسمبلی کے قواعد وضوابط 1997 کے مطابق سپیکر اور ڈپٹی سپیکر کی غیر موجودگی میں پینل آف چیئرمین کا رکن اجلاس کی صدارت کر سکتا ہے۔ ۔

Read Previous

امریکی حمائت یافتہ سری لنکن صدر کی حکومت پر سخت عوامی اور سیاسی دباؤ

Read Next

فضل الرحمان اسٹیبلیشمنٹ کے نیوٹرل ہونے پر برہم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *