کل حکومت اور اپوزیشن میں ملک کی بقا کی خاطر مزاکرات شروع ہوئے تو قوم کو کچھ اطمنان نصیب ہوا مگر آج پھر کپتان کی اسلام آباد پیشی کے موقع پر حکومت نے ایک بار پھر عمران خان کے ساتھیوں کو گرفتار کرلیا جس پر تحریک انصاف نے مزاکرات نہ کرنے کی دھمکی دے دی یہ دھمکی کام کرگئی اور آج گرفتار کیے گئے سیاسی اسیر رہا کردیے گئے تحریک انصاف نے حکومت کو الیکشن سے متعلق آج ہونیوالے مذاکرات سے متعلق نئی شرط عائد کی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ ہمارے تمام کارکنان کو فوری رہا کرو اس مطالبے کو حکومت نے فوری تسلیم کر لیا۔

 

 

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی آج اسلام آباد ہائیکورٹ میں پیشی کے موقع پر پولیس نے اظہار یکجہتی کیلئے آنے والے کارکنان کو گرفتار کر لیا تھا جس میں عمران خان کے بھانجے بھی شامل تھے اس پر ردعمل دیتے ہوئے پی ٹی آئی کے جنرل سیکرٹری اسد عمر نے کہا کہ حکومت مذاکرات بھی کر رہی ہے ساتھ ساتھ ہمارے کارکنان کی گرفتاریوں بھی جاری ہیں۔ انہوں نے آج حکومت سے ہونیوالے مذاکرات کیلئے شرط عائد کی تھی کہ اگر آج الیکشن پر مذاکرات کا دوسرا دور منعقد کرنا ہے تو کارکنان کو آزاد کیا جائے۔