پشاور: خیبرپختونخوا (کے پی) کے وزیراعلیٰ محمود خان نے منگل کے روز صوبائی اسمبلی کو تحلیل کرنے کا اعلان کر دیا۔
تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ نے یہ اعلان خیبرپختونخوا کابینہ کے اجلاس کے بعد کیا۔

First-ever KP assembly polls across tribal districts in June - Pakistan -  DAWN.COM

Image Source: Dawn

یہ پیشرفت وزیر اعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی کی جانب سے صوبائی اسمبلی کی تحلیل کی سمری پر دستخط کرنے کے چند روز بعد سامنے آئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ صوبائی اسمبلی تحلیل کرنے کی سمری آج شام گورنر کے پی کو ارسال کریں گے۔
محمود خان نے کہا کہ یہ کابینہ کی آخری میٹنگ تھی اور وہ تمام ایم پی ایز کے پورے دور میں تعاون کرنے اور صوبے کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرنے والے تمام افسران اور وزراء کے مشکور ہیں۔
اس سے قبل پنجاب اسمبلی آئینی طور پر تحلیل ہو گئی تھی کیونکہ پنجاب کے گورنر بلیغ الرحمان نے سمری پر دستخط کرنے سے معذرت کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اس عمل کا حصہ نہیں بن سکتے۔
وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی نے تحلیل کی سمری بھجوا دی اور آئین کے مطابق گورنر کے فیصلے سے قطع نظر اسمبلی 48 گھنٹوں میں تحلیل ہو جاتی ہے۔
واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پنجاب اسمبلی تحلیل ہونے کے بعد خیبرپختونخوا (کے پی) کی اسمبلی فوری طور پر تحلیل کردی جائے گی۔