لاہور: لاہور ہائی کورٹ (ایل ایچ سی) راولپنڈی بینچ نے پیر کو سابق وزیراعظم عمران خان، پی ٹی آئی کے سینئر نائب صدر فواد چودھری اور پارٹی سیکرٹری جنرل اسد عمر کے الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کی جانب سے جاری کیے گئے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری معطل کر دیے۔
جسٹس صداقت علی خان نے پی ٹی آئی رہنماؤں کے وارنٹ گرفتاری کے خلاف درخواست پر سماعت کی۔

Justice delayed: Courts overwhelmed by pandemic backlog - CalMatters

Image Source: CM

عدالت نے وارنٹ گرفتاری معطل کرتے ہوئے ای سی پی کو ہدایت کی کہ وہ پی ٹی آئی رہنماؤں کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی جاری رکھے۔
ای سی پی نے گزشتہ ہفتے توہین عدالت کیس میں پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان اور پارٹی کے دیگر رہنماؤں کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے۔
سابق وزیراعظم عمران خان، پی ٹی آئی رہنماؤں فواد چوہدری اور اسد عمر نے کیس میں حاضری سے استثنیٰ کی درخواست کی تھی جسے ای سی پی کے 4 رکنی بینچ نے مسترد کردیا۔
اس سے قبل سپریم کورٹ آف پاکستان نے الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کو پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان اور ان کی پارٹی کے رہنماؤں اسد عمر اور فواد چوہدری کے خلاف انتخابی ادارے کے خلاف متنازعہ ریمارکس پر دائر توہین عدالت کیس میں کارروائی جاری رکھنے کی اجازت دی تھی۔