سندھ میں لگ بھگ 5 بار بلدیاتی الیکشن ملتوی ہونے کے بعد بالآخر کل 15 جنوری کو 16 اضلاع میں بلدیاتی انتخابات کروادیے گئے مگر ایک روز گزرنے کے باوجوز کراچی کا 70 فیصد رزلٹ جاری نہیں کیا گیا –
سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کے تحت ہونے والے کراچی میں انتخابات کا غیر حتمی و غیر سرکاری رزلٹ موصول ہونا شروع ہو گیا ہے، مگر 20 گھنٹے گزر جانے کے باوجود ابھی تک کراچی کی بیشتر نشستوں کا نتیجہ میڈیا کے ساتھ شئیر نہیں کیا گیا – اگرچہ ابھی اس کا اعلان تو نہیں کیا گیا مگر امکان یہی ہے کہ پاکستان تحریک انصاف

 

 

کے رہنما فردوس شمیم نقوی اور جماعت اسلامی کے حافظ نعیم الرحمان چیئرمین یونین کونسل منتخب ہو جائیں گے اور خرم شیر زمان کے بارے میں بتایاجارہا ہے کہ وہ یہ الیکشن ہار رہے ہیں ۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق ضلع شرقی جناح ٹاون یوسی 2 سے ، پی ٹی آئی کے فردوس شمیم نقوی 2989ووٹ لے کر چیئر مین منتخب ہو گئے ہیں،جبکہ جماعت اسلامی کے مشیر علوی 1391 ووٹ لے کر دوسر ے نمبر پر رہے، اسی طرح ضلع وسطی یوسی 8نارتھ ناظم آباد کا نتیجہ بھی سامنے آیا ہے ، جہاں سے امیر جماعت اسلامی کراچی حافظ نعیم الرحمان کامیاب ہو گئے ہیں انھوں نے 6388ووٹ حاصل کیے ہیں ۔