ملک میں مہنگائی آسمان چھونے لگی پاکستان بھر میں مرغی کا گوشت غریب کے بعد اب امیر کی پہنچ سے بھی دور ہونا شروع ہوگیا اور مرغی کی قیمت 600 کا ہندسہ عبور کرگئی -ادھر لاہور میں برائلر مرغی کا گوشت سرکاری نرخ 530 �روپے فی کلو ہو گیا،اوپن مارکیٹ میں مرغی کا گوشت 600 روپے کلو تک فروخت ہونے لگا،سرکاری نرخ نامے کے مطابق فی کلو قیمت میں مزید10 روپے اضافہ ہوگیا۔ جس کے سد باب کے لیے شہریوں نے سوشل میڈیا پر 15 دن تک مرغی بائیکاٹ مہم شروع کردی ،شہری حلقوں کاکہناہے کہ شہری 2 ہفتے مرغی نہ کھائیں، قیمتیں گر جائیں گی ۔اگر اب بھی مرغی کا بائیکاٹ نہکیا تو پھر لاہوریے اور دیگر شہروں کے باسی کئی ماہ کے لیے مرغی کے گوشت سے محروم ہو جائیں گے –

 

راولپنڈی شہر اور گردونواح میں مرغی کی قیمت مسلسل اضافے کے بعد تاریخی سطح پر پہنچ گئی،پولٹری ایسوسی ایشن نے قیمت میں مزید اضافے کا عندیہ دیدیا۔نجی ٹی وی چینل کی خبر کے مطابق اندرون شہر مرغی کا گوشت580 اور نواحی ایریاز میں 590 روپے کلو ہوگیا،شہر میں زندہ مرغی 380 اور نواحی ایریاز میں 395 روپے کلو ہو گئی ۔

پولٹری ایسوسی ایشن کاکہناہے کہ مرغی فیڈ، خام مال سپلائی، بحال نہ ہوئی تو قیمت 700 روپے تک جا سکتی ہے ۔دوسری جانب شہریوں نے سوشل میڈیا پر 15 دن تک مرغی بائیکاٹ مہم شروع کردی ،شہری حلقوں کاکہناہے کہ شہری 2 ہفتے مرغی نہ کھائیں، قیمتیں گر جائیں گی ۔اگر اب بھی مرغی کا بائکاٹ نہ ہو تو پھر لاہوریے کئی ماہ کے لیے مرغی کے گوشت سے محروم ہو جائیں گے –