پاکستان تحریک انصاف جہاں پنجاب اور کے پی کے اسمبلی تحلیل کرنے جارہی ہے وہیں اس کی سی ای سی کی میٹنگ میں یہ فیصلہ بھی ہوگیاکہ تحریک انصاف کے 123 ممبران قومی اسمبلی اک بار پھر اسمبلی جاکر اجتماعی استعفے پیش کریں گے اور اگر سپیکر نے اس بار بھی ان کے استعفے قبول نہ کیے تو سپریم کورٹ اپنا واضح حکم نامہ جاری کرے گی جو پہلے بھی حکومت کے اس چرز عمل پر ناپسنددیدگی کا اظہار کرچکی ہے – اطلاعات ہیں کہ پی ٹی آئی کے 123ارکان نے جمعرات کو سپیکر کے سامنے پیش ہونے کا فیصلہ کیا ہے ۔

نجی ٹی وی چینل ہم نیوز نے ایک خبر جاری کی ہے جس کے مطابق پی ٹی آئی ارکان اسمبلی 22 دسمبر کو خیبرپختون خوا ہاؤس اسلام آباد میں جمع ہوں گے، ارکان ممکنہ طور پر شاہ محمود قریشی کی سربراہی میں پارلیمنٹ آئیں گے ،شاہ محمود قریشی ارکان کو لے کر سپیکر کے سامنے پیش ہوں گے،ذرائع کے مطابق ارکان سپیکر راجہ پرویز اشرف کے رو برو مستعفی ہونے کی تصدیق کریں گے۔کیونکہ عمران خان کے خلاف ناہلی کا فیصلہ الیکشن کمیشن جاری کرچکا ہے –