لاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے سینیٹر اعظم سواتی کی فوری رہائی کا مطالبہ کردیا۔
اپنی ٹویٹس کی سیریز میں عمران خان نے سینیٹر اعظم سواتی کے ساتھ جس ‘انتقامی’ انداز میں برتاؤ کیا جا رہا ہے اس کی مذمت کرتے ہوئے اسے افسوسناک اور قابل مذمت قرار دیا۔

“انہیں سینے میں شدید درد اور سانس لینے میں دشواری کے بعد صبح سویرے پمز منتقل کیا گیا تھا۔ جب ٹیسٹ کے نتائج کا انتظار تھا، کوئٹہ پولیس نے اسے ڈسچارج کر دیا اور اس کی جان کو خطرے میں ڈال کر لے گئے۔
عمران خان نے مزید کہا کہ یہ دیکھ کر افسوس ہوتا ہے کہ ہمارا نظام انصاف اعظم سواتی کے بنیادی انسانی حقوق کی بار بار خلاف ورزیوں کو روکنے کے لیے تیار نہیں۔
اس سے قبل یہ بات سامنے آئی تھی کہ بلوچستان پولیس نے پی ٹی آئی کے سینیٹر اعظم سواتی کو سینئر فوجی افسران کے خلاف متنازعہ ٹویٹس پوسٹ کرنے پر گرفتار کیا تھا۔
یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ سواتی کو دارالحکومت کی ایک عدالت سے بعد از گرفتاری ضمانت کے بعد ایک ماہ کے دوران اسی کیس میں دوسری مرتبہ گرفتار کیا گیا تھا۔