وزیراعظم پاکستان نے لیفیٹننٹ جنرل کو آرمی چیف تعینات کرنے کی منظوری دے دی جس کے لیے سمری صدر مملکت کو بھجوادی -تاہم صدر مملکت نے اس حوالے سے عمران خان کے ساتھ مشاورت کا فیصلہ کیا اور عارف علوی چند گھنٹوں میں لاہور کے زمان پارک مین عمران خان سے مشاورت کے لیے پہنچ گئے جس کے بعد پی ٹی آئی کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ آج شام قوم کو صدر مملکت کے فیصلے کے حوالے سے آگاہ کردیا جائے گا –

 

 

تحریک انصاف اور سابق وزیر اطلاعات فواد چودھری کا صدر مملکت اور عمران خان کی ملاقات کے بعد کہنا ہے کہ آرمی چیف کی تقرری کے حوالے سے مشاورت ہوئی ہے ، شام ساڑھے 6 اور 7بجے کے درمیان ایوان صدر آفیشل سٹیٹ منٹ جاری کرے گا۔ ڈاکٹر عارف علوی اور عمران خان کی ملاقات ختم ہونے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چودھری نے کہا کہ ملاقات میں آرمی چیف کی تقرری کے حوالے سے سیاسی ،آئینی و قانونی پہلوں کا احاطہ کیا گیا ہے، جو بھی ہو گا آئین کے مطابق ہو گا، صدر مملکت عارف علوی عمران خان سے ملاقات کے بعد دوبارہ اسلام آباد کیلئے روانہ ہو گئے – چیئر مین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے صدر مملکت عارف علوی کو مشورہ دیا کہ ہماری کسی ادارے کے ساتھ کوئی جنگ نہیں ہے، ہم نے آئین و قانون کی پاسداری کرنی ہے اس لیے آرمی کی 2 اہم ترین تعیناتیوں کیلئے وزیر اعظم آفس سے بھجوائی گئی سمری کو آئین و قانو ن کے مطابق دیکھیں۔