پاکستان میں آرمی چیف کی تعیناتی کا مرحلہ جتنا پیچیدہ اس بار ہوا اس سے پہلے 75 سال کی تاریخ میں کبھی ایسا نہیں ہوا تھا – آرمی چیف قمر جاوید کی ریٹائرمنٹ میں صرف 8 روز باقی رہ گئے ہیں مگر ابھی تک وہ 5 نام سامنے نہیں آسکے جن میں سے کسی ایک کو شہباز شریف نے آمرمی چیف منتخب کرناہے مگر آج ایسا لگ رہا ہے کہ نئے آرمی چیف کی تعیناتی کے حوالے سے آج رات 12 بجے تک کوئی حتمی فیصلہ کرہی لیا جائے گا – وزارت دفاع کی جانب سے سمری موصول ہونے کے فوری بعد شہبازشریف نے وزیر دفاع خواجہ آصف ، وزیر داخلہ رانا ثناءاللہ ، وزیر قانون سردار ایاز صادق کو وزیراعلیٰ ہاؤس طلب کرلیا -اور اب اس پر مشاورت کا عمل جاری ہے –

 

نئے آرمی چیف کی تعیناتی کیلئے وزارت دفاع کی سمری وزیراعظم ہاﺅس کو موصول ہو گئی ہے- وزارت دفاع کی جانب سے موصول ہونے والی سمری میں 5 نام تجویز کیئے گئے ہیں جن میں لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر ، لیفٹیننٹ جنرل سا�حر شمشاد ، لیفٹیننٹ جنرل اظہر عباس، لیفٹیننٹ جنرل نعمان اور لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید شامل ہیں ۔ تاہم قوی امکان یہی ہے کہ لیفٹیننٹ جنرل اظہر عباس ہی پاکستان کے نئے آرمی چیف تعینات کیے جائیں گے –