دھمکی آمیز کال کے بعد شیخ رشید کی لال حویلی کی سیکیورٹی سخت کردی گئی۔
راولپنڈی: مقامی پولیس نے دھمکی آمیز کال موصول ہونے کے بعد عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کی رہائش گاہ لال حویلی کی سیکیورٹی سخت کردی ہے۔

راولپنڈی پولیس کو سینٹرل پولیس آفس (سی پی او) کے آفیشل نمبر پر دھمکی آمیز کال موصول ہوئی جس میں شیخ رشید پر ممکنہ حملے کی اطلاع دی گئی، کال کرنے والے نے اپنی شناخت ارشاد انصاری کے نام سے کی۔

Unidentified persons open fire on Lal Haveli of Interior Minister, child  injured

image source: 24newshd

سابق وزیر داخلہ راشد شفیق کے بھانجے کی دھمکی آمیز کال کی اطلاع پر پولیس نے لال حویلی میں سیکیورٹی سخت کردی ہے۔
اشد شفیق نے ایک بیان میں کہا کہ دھمکی آمیز کال کا مقدمہ سول لائنز تھانے میں درج کیا جا رہا ہے، جبکہ پولیس نے بھی معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔

قبل ازیں ستمبر میں عوامی مسلم لیگ (اے ایم ایل) کے سربراہ شیخ رشید نے دعویٰ کیا تھا کہ انہیں ان کی رہائش گاہ لال حویلی کے لینڈ لائن نمبر پر دھمکی آمیز کال موصول ہوئی تھی۔
اے ایم ایل کے سربراہ شیخ رشید نے کوہسار تھانے میں رپورٹ درج کرادی۔ سابق وفاقی وزیر نے وہ نمبر فراہم کیا جس سے انہیں کال پر دھمکیاں دی گئیں۔

دوسری جانب شیخ رشید نے بھی اپنے جاری کردہ پیغام میں واضح کیا ہے کہ پہلے انہیں جان سے مارنے کی دھمکیاں مل رہی تھیں، اب لال حویلی پر ڈرون آپریشن کیا جا رہا ہے، جس کی ویڈیو حکام کو بھیجی جا رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ کچھ عناصر عمران خان کے لانگ مارچ کے دوران راولپنڈی کا ماحول خراب کرنا چاہتے ہیں لیکن پنڈی پرامن شہر ہے اور کمیٹی چوک میں لانگ مارچ کا استقبال کریں گے۔