وہ غریب پاکستانی جو اے سی کوسٹرز کا کرایہ افورڈ نہ کرنے کے سبب ٹرین کے ذریعے اپنے اہل کانہ کو ایک شہر سے دوسرے شہر لے جاتے ہیں ان کے لیے بری خبر یہ ہے کہ پاکستان ریلوے نے بھی اپنے کرایوں میں تقریبا دو گنا اضافہ کردیا ہے اب آپ جب سفر کے لیے نکلیں تو  زیادہ نوٹ اپنی جیب میں ڈالیں ورنہ پھر گھر واپس لوٹنا ہوگا –

 

 

پاکستان ریلوے نے 3 ٹرینوں کے کرائے بڑھا دیئے جبکہ 4 ٹرینیں نجی شعبے سے واپس لینے کا فیصلہ کرلیا۔راولپنڈی سے کراچی کیلئے تیز گام کا اکانومی کلاس ٹکٹ 2000 روپے سے بڑھا کر 3500 روپے کردیا ہے اس کے کرائے میں ایک ساتھ 1500 روپے اضافہ کردیاگیا ہے –  راولپنڈی سے لاہور ریل کار کا کرایہ 500 روپے سے بڑھا کر950روپے کر دیا گیا ہے۔جعفر ایکسپریس کا کرایہ راولپنڈی سے کوئٹہ 2860 روپے سے بڑھا کر 3700 روپے کر دیا گیا ہے اس پر عملدرآمد کا بھی آغاز ہو گیا ہے۔پاکستان ریلوے نے نجی شعبہ میں دی گئی مہر ایکسپریس، بہاؤالدین زکریا ایکسپریس، فرید ایکسپریس اور بلال ایکسپریس رواں ماہ کے آخر پر واپس سرکاری کنٹرول میں لے رہا ہے جس کی تیاریاں شروع کر دی گئی ہیں۔