لاہور: پنجاب گورنر ہاؤس کی انتظامیہ نے عمارت کے باہر پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے کارکنوں کے احتجاج کے بعد صوبائی حکومت سے اضافی سیکیورٹی مانگ لی ہے۔
گورنر ہاؤس کی انتظامیہ نے امن و امان کی بگڑتی ہوئی صورتحال کے پیش نظر چیف سیکرٹری اور انسپکٹر جنرل (آئی جی) پنجاب پولیس کو پولیس کی نفری بڑھانے کے لیے مراسلہ بھیجا تھا۔

Security in Lahore beefed up following Peshawar blast - Minute Mirror

Image Source: MM

اپنے خط میں انتظامیہ نے کہا کہ پی ٹی آئی کارکنوں نے گورنر ہاؤس کے مال روڈ گیٹ پر ٹائر جلا کر اثاثوں کی توڑ پھوڑ کی اور سیکیورٹی تنصیبات کو نقصان پہنچایا۔
اس میں مزید کہا گیا کہ مشتعل ہجوم نے گورنر ہاؤس کا گیٹ توڑنے کی کوشش کی۔ انتظامیہ نے صوبائی حکام سے عمارت میں پولیس کی تعیناتی بڑھانے کا کہا۔
علاوہ ازیں یہ بھی معلوم ہوا کہ پنجاب گورنر ہاؤس کی سیکیورٹی کی ذمہ داریاں مرکز کے حوالے کرنے کے لیے مشاورت جاری ہے۔ لاہور میں گورنر ہاؤس کی سیکیورٹی کے فرائض رینجرز یا فرنٹیئر کور (ایف سی) کے حوالے کیے جانے کا امکان ہے۔
پی ٹی آئی کارکنوں کے حالیہ احتجاج کے پیش نظر گورنر ہاؤس لاہور میں اسلام آباد پولیس تعینات کرنے کی بھی سفارش کی گئی۔ حتمی فیصلہ کرنے سے قبل متعلقہ محکموں سے رپورٹ بھی طلب کر لی گئی۔
اس سے قبل دن میں، پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے حامی لانگ مارچ کے دوران پارٹی کے سربراہ اور سابق وزیراعظم عمران خان پر حملے کے خلاف ملک کے مختلف حصوں میں سڑکوں پر نکل آئے۔