سابق وزیر دفاع اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) خیبر پختونخوا کے صدر پرویز خٹک نے کہا کہ وہ سیاست سے ریٹائر ہونا چاہتے ہیں۔
اے آر وائی نیوز سے بات کرتے ہوئے پرویز خٹک نے حکومت کے ساتھ بیک ڈور مذاکرات کی خبروں کی تردید کی۔
انہوں نے کہا کہ فی الحال پی ٹی آئی اور پی ڈی ایم حکومت کے درمیان غیر سنجیدہ رویہ کی وجہ سے کوئی بات چیت نہیں ہو رہی ہے۔

Pervez Khattak's brother, nephew leave PTI to join PPP

Image Source: 24newshd

رپورٹر کے سوال کے جواب میں پرویز خٹک نے کہا کہ میں نے نہ تو وزیراعظم بننے کا سوچا اور نہ ہی اس دوڑ میں حصہ لیں گے۔ پی ٹی آئی رہنما نے مزید کہا کہ وہ اب تھک چکے ہیں اور سیاست سے ریٹائر ہونا چاہتے ہیں۔
قبل ازیں، سابق وفاقی وزیر اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما، پرویز خٹک نے ہفتے کے روز کہا کہ نئے انتخابات کا مطالبہ ہی پاکستان کو بحران سے نکالنے کا واحد حل ہے۔
وہ اسلام آباد کے پریڈ گراؤنڈ میں ’’امپورٹڈ حکومت‘‘ کے دور میں بڑھتی مہنگائی کے خلاف پی ٹی آئی کے شاندار پاور شو سے خطاب کر رہے تھے۔ پرویز خٹک نے کہا کہ عوام بڑی تعداد میں مہنگائی اور شہباز شریف کی قیادت میں حکومت کے خلاف سراپا احتجاج ہیں۔
پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ سابق وزیراعظم عمران خان نے مہنگائی کو کنٹرول کیا اور انٹرنیشنل مانیٹری فنڈ (آئی ایم ایف) کا ہر مطالبہ ماننے سے انکار کیا۔ انہوں نے کہا کہ ریکارڈ مہنگائی نے عوام کی ہڈیاں توڑ دی ہیں۔
پرویز خٹک نے عوام سے اپیل کی کہ وہ اگلے عام انتخابات میں پی ٹی آئی کو ووٹ دیں اور عمران خان کو دو تہائی اکثریت دیں تاکہ کسی کی مدد کے بغیر قانون سازی ہو سکے۔