عمران خان کا لانگ مارچ جوں جوں آگے بڑھ رہا ہے اور لوگ اس میں شمولیت کررہے ہیں خان کے بیانات میں شدت اور اعتماد آتا جارہا ہے آج انھوں نے ایک بہت بڑا اعلان کیا ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف، میں آپ کو چیلنج کرتا ہوں، جب آپ واپس آئیں گے تو میں آپ کو آپ کے اپنے حلقے میں ہی شکست دوں گا۔ انہوں نے تین بار کے سابق وزیر اعظم کو اس بات سے بھی ڈرایا کہ جب وہ پاکستان واپس آئیں گے تو ہم پی ٹی آئی کی حکومت اور عوام آپ کو ایئرپورٹ سے اڈیالہ جیل لے جائیں گے۔

عمران نے سابق صدر آصف علی زرداری کو بھی نشانہ بنایا اور کہا کہ وہ پیپلز پارٹی کے روایتی گڑھ سندھ میں اپنی آمد کے لیے تیار ہو جائیں ۔ خان کا کہنا تھا کہ کہ سندھ کے لوگوں کو “سب سے زیادہ آزادی کی ضرورت ہے”، عمران نے زرداری کو متنبہ کیا کہ وہ سندھ میں ان کے پیچھے آرہے ہیں۔�

 

پی ٹی آئی کے بانی قائد نے اس بات کا اعادہ کیا کہ حقیقی آزادی” کا وقت آگیا ہے اور مارچ کے شرکاء سے کہا کہ “ہم اسے انصاف کے ذریعے حاصل کریں گے اور قانون اور انصاف کی بالادستی کے لیے لڑیں گے ۔عمران نے مارچ کے شرکاء سے کہا کہ یہ نظام جاری نہیں رہ سکتا اور ہمیں اسے بدلنا ہو گا۔” انہوں نے لوگوں سے کہا کہ جب ان سے پوچھا جاتا ہے کہ پاکستان کو کون بچائے گا تو اس کا جواب عمران خان نہیں ہے، یہ آپ ہوں گے جو پاکستان کو بچائیں گے اور آزاد کریں گے۔