کل عمران خانے کنٹینر کے نیچے آکر ایک خاتون رپورٹر صدف نعیم شہید ہوگئیں تھیں جس کامختلف لوگوں نے فائدہ اٹھانے کی بھر پور کوشش کی -کل ہسپتال میں بھی ایک باریش بزرگ آدمی نے اسے قتل قرار دیا تھا جس پر صدف نعیم کے چچا نے سخت برہمی کا اظہار کیا تھا -اس کے بعد بھی یہ سلسلہ جاری رہا تو صدف کے شوہر خود سامنے آئے اور لوگوں اور سیاسی جماعتوں کو شٹ اپ کال دے ڈالی -ان کا کہناتھا کہ یہ المناک حادثہ تھا اس میں کیا ہوا کیا نہیں صدف کا پاؤں پھسلا یا اسے کسی نے دھکا دیا کیونکہ ہمارے سامنے اس کی کوئی فوٹج موجود نہیں اس لیے میں یہ معاملہ اللہ پر چھوڑتا ہوں اور وہ سب سے بڑا منصف ہے اگر کسی نے اسی حرکت کی ہوگی تو اللہ پاک کی ذات اسے کبھی معاف نہیں کرے گی-

 

عمران خان کے کنٹینر کے نیچے کر آکر شہید ہونے والی خاتون صحافی صدف نعیم کے شوہر محمد نعیم نے قانونی کارروائی نہ کرنے کے فیصلے پر بیان دیتے ہوئے کہا کہ مجھ پر سکی کی جانب سے کوئی دباؤ نہیں ہے – آج سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی تھی جس میں دیکھا جاستا ہے کہ خاتون صحافی کے شوہر ایک کاغذ پر دستخط کر رہے تھے جبکہ وہاں پر تحریک انصاف کے رہنما میاں اسلم اقبال بھی موجود تھے جو ان کے دستخط کے بارے میں ہدایات دے رہے تھے ، اس ویڈیو کے بارے میں خواجہ سعدرفیق نے الزام عائید کیا تھا کہ خاتون رپورٹر کے خاوند کو ڈرا دھمکا کر کر قانونی کارروائی نہ کرنے کیلئے کاغذ پر دستخط لیئے جارہے ہیں تاکہ وہ عدالت سے رجوع نہ کرسکے ۔تاہم اب ان کے دوسری بار یپنے بیان پر قائم رہنے سے تحریک انصاف کو سکھ کا سانس محسوس ہوگا –