پنجاب اور سندھ میں ڈینگی کی وبا شدت اختیار کرنے لگی -سیکرٹری صحت پنجاب کے مطابق راولپنڈی سے 132، لاہور سے 102 اور گوجرانوالہ سے 54 ڈینگی کیسز رپورٹ ہوئے۔ راولپنڈی میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مچھروں سے پھیلنے والے انفیکشن سے ایک شخص جان کی بازی ہار گیا۔کراچی میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مچھروں سے پھیلنے والی بیماری کے مزید 277 کیسز رپورٹ ہوئ

 

سندھ کا شہروں میں کھڑا پانی ڈینگی کا بڑا سبب بن گیا اس کے علاوہ گیسٹرو کی وبا سے بھی اموات رپورٹ ہوئیں -محکمہ صحت سندھ کے مطابق شہر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ڈینگی بخار کے 277 کیسز رپورٹ ہوئے، جس سے ماہانہ تعداد 2000 سے تجاوز کر گئی۔ان کیسز میں سے ڈسٹرکٹ ایسٹ میں 54، وسطی میں 76، کورنگی میں 85، جنوبی میں 26، غربی میں 13، ملیر میں 26 اور ضلع کیماڑی میں 8 کیسز رپورٹ ہوئےپیر کو، وزارت صحت نے بتایا کہ پاکستان میں ڈینگی وائرس کے کیسز وبائی حد تک پھیل رہے ہیں اور اس سال پاکستان میں اس مرض کے 41,000 سے زیادہ کیسز ہیں۔

 

ذرائع کے مطابق وزارت قومی صحت نے ایک تفصیلی رپورٹ میں کہا ہے کہ رواں سال مچھروں سے پھیلنے والی 41 ہزار 746 بیماریاں رپورٹ ہوئی ہیں۔گزشتہ چار دنوں میں ملک بھر میں ڈینگی وائرس کے 4194 کیسز اور 6 اموات رپورٹ ہوئیں۔اس سال ڈینگی وائرس نے 84 اموات کا دعویٰ کیا ہے، جن میں سے زیادہ تر کا تعلق سیلاب سے متاثرہ صوبہ سندھ سے ہے۔ ذرائع کے مطابق رواں سال سندھ میں ڈینگی کے 12 ہزار 947 کیسز رپورٹ ہوئے جن میں 43 اموات ہوئیں۔