مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز عمران خان کی آڈیو لیکس کے معاملے پر آپے سے باہر ہوگئیں انھوں نے پاکستان تحریک انصاف ے چیئرمین عمران خان کو “غدار” قرار دے دیا – مریم کی ڈیمانڈ تھی کہ انہیں عبرت کا نشان بنا یا جائے ۔

آڈیو لیک ہونے کے بعد مریم نواز نے ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا “اگر آج ہر طرح کا سنگین جرم ثابت ہونے کے بعد بھی اس غدار عمران کو عبرت کا نشان نہیں بنایا جاتا تو پھر ملک کی تباہی کا ذمہ دار ہم سب کو سمجھا جائے گا مگر ان کا اشارہ پاکستانی افوج کی جانب تھا ۔

مریم نواز نے اپنے ادروں سے گلہ کرتے ہوئے کہا کہ “تکلیف دہ بات یہ نہیں کہ ایک فارن فنڈڈ فتنے نے پاکستان کی تقدیر سے کھیلا،اس نے تو یہی کرنا تھا کیونکہ ملک میں انتشار پھیلانے کے عوض اس نے لاکھوں ڈالر پکڑے ہوئے تھے، جو ہم سب پاکستانیوں کے لیے لمحہ فکریہ وہ یہ کہ عمران غدار وہ سب کرتا رہا اور سب چپ کر کے دیکھتے رہے ۔

کونسا جرم ہے جو اس پر ثابت نہیں ہوا؟ وہ خود کہہ رہا ہے کہ میں نے عوام کے ساتھ کھیلنا ہے۔

 

 

مریم نواز شریف کا کہنا تھا کہ ” بائیس کڑوڑ کا ملک 4 سال ایک نااہل، نا ہنجار اور غدار کے ہاتھوں میں گروی رہا۔ عمران خان نے دوسرے ممالک کے ساتھ بھی پاکستان کے تعلقات خراب کرکے ملک کو تنہا کردیا – اور ثاقب نثار جیسوں نے اسے صادق و امین قرار دیااب دیکھنا یہ ہے کہ آنے والے دنوں میں اور کتنی آڈیو لیکس عوام کی نظروں کے سامنے آتی ہیں ایسا محسوس ہورہاہے کہ آنے والے دنوں مین سیست اور سیاست دانوں کی قسمت اور مستقبل کا فیصلہ اب یہ آڈیو لیکس کے ہاتھوں میں ہے –