تحریک انصاف کے بانی رکن اور ماہر قانون حامد خان نے عمران خان سے دوریوں اور پھر قربت کی وجہ بتا دی , حامد خان نے بتایا کہ جہانگیر ترین اور علیم خان نے عمران خان کی پیٹھ میں چھرا گھونپا کیونکہ وہ صرف ذاتی مفاد کے لیے پارٹی مین شامل ہوئے تھے اور جب ان کا مطلوبہ ہدف پورا نہ ہوا تو وہ خان کے خلاف ہوگئے ۔ان کا کہنا تھا صورتحال واضح ہونے پر عمران خان نے شاہ محمود قریشی کو میرے پاس بھیجا کہ سفر وہیں سے شروع کرتے ہیں جہاں سے ختم ہوا تھا۔

 

حامد خان نے ایک اہم راز پر سے پردہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ جسٹس قاضی فائز عیسی کے خلاف وزیراعظم کے ریفرنس پر واضح کر دیا تھا کہ ایماندار اور قابل جج پر ریفرنس مخصوص قوتوں نے کروایا آنے والے وقت میں میری تمام باتیں سچ ثابت ہوئیں پاکستانی قوم نے بھی دیکھا کہ جہانگیر ترین، علیم خان اور قاضی فائزعیسی کے معاملے میں میرا موقف درست تھا۔

رہنما تحریک انصاف حامد خان نے فواد چوہدری کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ فواد چوہدری بھی خاص طور سے طاقت ور حلقوں کی ہی جانب سے بھیجے گئے ہیں، ان کا مقصد عمران خان اور پارٹی کو نقصان پہنچانا ہے۔یاد رہے کہ حامد خان اس سے پہلے بھی فواد چوہدری کے حوالے سے مختلف بیانات دے چکے ہیں اور ان کے اور فواد چوہدری کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ معمول کی بات بن گئی ہے ۔