لاہور: سٹی ٹریفک پولیس لاہور نے دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کے خلاف کریک ڈاؤن تیز کر دیا ہے کیونکہ شہر میں موسم بدلنا شروع ہو گیا ہے جس کے باعث سموگ کا خدشہ بڑھ گیا ہے۔
چیف ٹریفک آفیسر (سی ٹی او) لاہور سید منتظر مہدی نے دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کا ریکارڈ مرتب کرنے کا بھی حکم دیا ہے، پہلی بار دھواں چھوڑنے والی گاڑیوں کو 2 ہزار روپے کا چالان کرنے کا حکم دیا ہے۔
دوسری جانب دوبارہ پکڑے جانے پر کاغذات ضبط کرکے گاڑیاں ضبط کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔

Mideast, not India, is to blame for Punjab smog

Image Source: The Express Tribune

منتظر مہدی نے بتایا کہ رواں ماہ کے دوران 2 ہزار 456 گاڑیوں، کمرشل گاڑیوں، رکشوں کو چالان ٹکٹ جاری کیے گئے جبکہ رواں سال کے دوران 44 ہزار 111 کمرشل گاڑیوں کو چالان ٹکٹ جاری کیے گئے۔
سی ٹی او لاہور نے کہا کہ ٹریفک پولیس، ٹرانسپورٹ اور محکمہ ماحولیات کی مشترکہ ٹیمیں بھی تشکیل دی گئی ہیں، خصوصی چوکیاں قائم کرکے کریک ڈاؤن کو یقینی بنایا جائے۔
انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی اور سموگ سے متعلق آگاہی مہم بھی بس مالکان یونین کے تعاون سے شروع کی جاتی ہے، گاڑیوں سے نکلنے والا نقصان دہ دھواں سموگ کا باعث بنے گا۔
منتظر مہدی نے کہا کہ احتیاطی تدابیر اختیار کرنے سے سموگ کے خطرات سے بچا جا سکتا ہے، اقدامات کرنے سے سموگ اور ماحولیاتی آلودگی کے اثرات کم ہوں گے۔
سی ٹی او لاہور نے مزید کہا کہ ماحولیاتی آلودگی اور سموگ کے باعث لوگوں کو سانس لینے میں دشواری، ناک اور گلے کی بیماریوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ماحولیاتی آلودگی اور فضائی آلودگی سے پاک آب و ہوا ہی صحت مند معاشرے کی ضمانت ہے۔