فیصل آباد: جماعت اسلامی (جے آئی) نے بجلی کے مہنگے بلوں کے خلاف فیصل آباد کی کینال روڈ کو بلاک کر دیا ہے اور صارفین پر عائد تمام سرچارجز واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جے آئی کے مشتعل مظاہرین نے فیصل آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی (فیسکو) ہیڈ کوارٹر کے باہر کینال روڈ پر احتجاجی مظاہرہ کیا، جس میں بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر مطالبہ کیا گیا تھا کہ بجلی کے نرخوں میں اضافہ واپس لیا جائے۔

Protests break out against inflated electricity bill across Punjab

Image Source: MM News TV

دریں اثناء کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کے لیے انسداد فسادات فورس اور ضلعی پولیس کی بھاری نفری فیسکو ہیڈ کوارٹرز کے باہر تعینات کر دی گئی ہے۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ہیڈ کوارٹر کے باہر خاردار تاریں اور رکاوٹیں لگا دی ہیں۔

مظاہرین نے اعلان کیا کہ اگر ٹیرف میں اضافہ واپس نہ لیا گیا تو وہ بل جمع نہیں کرائیں گے۔

اس سے قبل 31 اگست کو نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے جولائی 2022 کے لیے ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کے نرخوں میں 4.34 روپے فی یونٹ اضافے کی منظوری دی تھی۔

پاور ریگولیٹر نے ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ پر غور کرنے کے لیے عوامی سماعت کی۔ نیپرا نے بتایا کہ سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی گارنٹی نے بجلی کے نرخوں میں 4.69 روپے فی یونٹ اضافے کے لیے درخواست جمع کرائی تھی۔